سابق ایئر چیف مارشل (ر) اصغر خان حرکتِ قلب بند ہونے کے باعث انتقال

خاندانی ذرائع کے مطابق سابق ایئر چیف مارشل اصغر خان گزشتہ کئی روز سے سی ایم ایچ راولپنڈی میں زیر علاج تھے تاہم آج (جمعہ کو) صبح کے وقت انہیں دل کا دورہ پڑا جس کے باعث وہ اس جہانِ فانی سے کوچ کرگئے۔ مارشل اصغر خان کی عمر 97 برس تھی۔ ان کی نمازِ جنازہ کل (ہفتہ کو) نواں شہر میں ادا کی جائے گی۔
واضح رہے کہ اصغر خان 1957 میں ایئر چیف کے عہدے پر فائز ہوئے ، اس وقت ان کی عمر محض 36 سال تھی اور وہ کم عمر ترین فضائیہ کے سربراہ قرار پائے تھے۔ انہوں نے سرکاری ذمہ داریوں سے سبکدوش ہونے کے بعد تحریکِ استقلال کے نام سے سیاسی جماعت قائم کی جس نے بھٹو دور میں سخت اپوزیشن کا کردار ادا کیا۔ ایئر مارشل اصغر خان نے جنوری 2012 میں اپنی سیاسی جماعت تحریک انصاف میں ضم کردی تھی۔

امورخانہ داری کی ماہر زبیدہ آپا انتقال کرگئیں

ماہرامورخانہ داری زبیدہ طارق المعروف زبیدہ آپا کراچی میں انتقال کرگئیں، انہیں طبیعت ناساز ہونے پر اسپتال لے جایا گیا تاہم حرکت قلب بند ہونے کے باعث وہ جانبرنہ ہوسکیں۔

زبیدہ آپا کی نمازجنازہ آج بعد نماز جمعہ جامع مسجد سلطان ڈیفنس کراچی میں ادا کی جائے گی۔ زبیدہ آپا کے انتقال کے بعد ان کے گھرپرتعزیت کرنے والوں کا تانتا بندھ گیا، فلم اورٹی وی کے اداکاروں کے علاوہ زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والےافرادان کے گھرپہنچے۔
زبیدہ طارق 4 اپریل 1945 کو بھارتی شہر حیدر آباد دکن میں پیدا ہوئیں، 1945 میں تقسیم ہند کے بعد ان کا خاندان پاکستان منتقل ہو گیا۔ زبیدہ آپا کا تعلق ایسےعلمی اورادبی گھرانے سے تھا جس کاحصہ معروف مصنفہ فاطمہ ثریا بجیا ، منفرد لہجے کی شاعرہ زہرہ نگاہ اورمشہورمزاح نگار انور مقصود بھی ہیں۔

امریکی خفیہ اطلاعات پر افغانستان سے پاکستان منتقل کئے جانے والے غیر ملکیوں کو پاک فوج نے آپریشن کے بعد بازیاب کر الیا: آئی ایس پی آر

 پا ک فوج نے 2012ءمیں افغانستان سے اغوا کئے گئے 5غیر ملکیوں کو کرم ایجنسی میں کامیاب آپریشن کرتے ہوئے بازیاب کرلیا ہے، مغویوں کو گذشتہ روز افغانستان سے پاکستان منتقل کیا گیا تھا ، جس کی بروقت خفیہ اطلاعات امریکی خفیہ اداروں نے پاک فوج کو دیں جس کے بعد فوری طور پر کارروائی کرتے ہوئے ان غیر ملکیوں کو بازیاب کرالیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) سے جاری بیان کے مطابق پاک فوج نے خفیہ اطلاع پر آپریشن کرتے ہوئے غیر ملکی خاندان کو دہشت گردوں کے چنگل سے بازیاب کرا لیا ہے، اس حوالے سے امریکی خفیہ ادارے نے پاکستان آرمی کو اطلاع دی کہ غیر ملکی خاندان کو افغانستان سے پاکستان منتقل کیا جا رہا ہے،

گذشتہ روز ملنے والی بروقت اطلاع کے بعد پاک فوج نے کارروائی کرتے ہوئے انہیں بازیاب کرا لیا ، اس خاندان میں کینیڈین شہری،اسکی امریکی بیوی اور 3 بچے شامل تھے۔ دہشتگرمغویوں کوکرم ایجنسی سے پاکستان منتقل کر رہے تھے۔

عمران خان کی گرفتاری کا حکم سنتے ہی نواز شریف نے بڑا علان کر دیا ۔۔ ملکی سیاست میں ایک بار پھرکھلبلی مچ گئی

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)کرپشن کے الزامات پر نااہل قرار پانے والے سابق وزیراعظم نواز شریف آج لندن سے وطن واپس پہنچیں گے اور کل احتساب عدالت کے روبرو پیش ہوں گے۔

مسلم لیگ (ن) کے ذرائع کے مطابق نواز شریف آج رات لندن سے وطن واپس پہنچیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کل تین نیب ریفرنسز کی سماعت کے لیے احتساب عدالت میں پیش ہوں گے جہاں ان پر اور شریک ملزمان مریم صفدر اورکیپٹن(ر)صفدر پر فرد جرم عائد کیئے جانے کا امکان ہے-

احتساب عدالت کی9اکتوبرکو ہونے والی سماعت پر نوازشریف کے وکیل نے سماعت 15دن کے لیے ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی جسے عدالت نے مسترد کرتے ہوئے سماعت کے 12اکتوبر تک ملتوی کردی تھی-قانونی ماہرین کا کہنا ہے نوازشریف اگر احتساب عدالت میں پیشی کے لیے واپس نہ آئے تو ان کے بیٹوں حسن اور حسین نوازکی طرح انہیں بھی اشتہاری قرار دینے کی کاروائی عمل میں لائی جاسکتی ہے-

خیال رہے کہ احتساب عدالت نے 9 اکتوبر کو سماعت کے دوران قومی احتساب بیورو کے تین ریفرنسز میں سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم صفدر اور کیپٹن (ر)محمد صفدر پر فرد جرم کے لئے 13 اکتوبر کی تاریخ مقرر کی تھی جبکہ عدالت نے حسن اور حسین نواز کا مقدمہ الگ کردیا تھا۔

سپریم کورٹ کے پاناما کیس سے متعلق 28 جولائی کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز احتساب عدالت میں دائر کئے ہیں جو ایون فیلڈ پراپرٹیز، العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسمنٹ سے متعلق ہے۔نیب کی جانب سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف ان کے بچوں حسن، حسین ، بیٹی مریم صفدر اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کو ملزم ٹھہرایا ہے۔

العزیزیہ اسٹیل ملز جدہ اور 15آف شور کمپنیوں سے متعلق فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں نواز شریف اور ان کے دونوں بیٹوں حسن اور حسین نواز کو ملزم نامزد کیا گیا ہے۔سابق وزیراعظم نواز شریف نیب ریفرنس کا سامنا کرنے کے لئے 2 مرتبہ 26ستمبر اور 2اکتوبر کو ذاتی حیثیت میں احتساب عدالت کے روبرو پیش ہوئے تھے۔

سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف اپنی اہلیہ کی تیمارداری کے سلسلے میں لندن میں ہی قیام پذیر ہیں۔نو منتخب رکن قومی اسمبلی بیگم کلثوم نواز علالت کے باعث علاج کے لیے برطانوی دارالحکومت لندن میں اپنے صاحبزادے کے گھر مقیم ہیں۔

بیگم کلثوم نواز کے گلے میں کینسر کی تشخیص ہونے کے بعد ان کے تین آپریشن ہو چکے ہیں اور اب ان کی کیمو تھراپی ہو رہی ہے۔

کلبھوشن یادیو کی پھانسی پکی ،پاکستان کا بڑا اقدام،وزیر اعظم نے منظوری دیدی ،بھارت میں ہلچل

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے بھارتی جاسوس کلبھوشن کیس میں جسٹس (ر) تصدق جیلانی کو عالمی عدالت انصاف میں پاکستان کا ایڈہاک جج مقرر کرنے کی منظوری دے دی۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان جمعرات کو با ضابطہ طور پر ایڈہاک جج کی تقرری بارے عالمی عدالت انصاف کو آگاہ کریگا۔

واضح رہے کہ پاکستان کی جانب سے جاسوس کلبھوشن یادیو کو سزائے موت دینے کےخلاف بھارت نے عالمی عدالت انصاف سے رجوع کرتے ہوئے پاکستان پر ویانا کنونشن کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا تھا۔

عالمی عدالت انصاف میں عوامی سماعت 15 مئی کوہوئی جس میں پاکستان نے کلبھوشن کیس سے متعلق عالمی عدالت کے دائرہ کار کو چیلنج کیا جبکہ بھارت نے کلبھوشن کی پھانسی رکوانے کی درخواست کی تھی۔عالمی عدالت انصاف نے 18 مئی کو بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ کے جاسوس کلبھوشن یادیو کی سزائے موت کے معاملے پر حکم امتناع جاری کیا تھا۔